کرونا وائرس: ہمیں کیا کرنا چاہیے؟

مصنف، امانت علی شیخ

چین کے شہر ووہان سے شروع ہونے والا کرونا وائرس اب دنیا کے بڑے حصے بشمول پاکستان میں پھیل چکا ہے۔ اس وبا نے دنیا پر ایک خوف طاری کر دیا ہے۔ وائرس سے اب تک چھہ ہزار سے زائد اموات ہو چکی ہیں۔ چین کے بعد سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملکوں میں اٹلی اور ایران سرِفہرست ہیں۔ خوف اتنا ہے کہ دنیا کے بڑے بڑے شہر لاک ڈاؤن ہو گئے ہیں۔ پاکستان میں بھی اب تک کرونا کے کیسز 150 سے تجاوز کر گئے ہیں اور ایک دو مریض صحتیاب بھی ہو گئے ہیں لیکن کرونا متاثرین کا اسکور بڑھتا جا رہا ہے۔ ایسے میں ہم کیا کریں؟ یہ اہم سوال ہے۔ دنیا کے ماہرین اس خطرناک وائرس کا علاج ڈھونڈ رہے ہیں۔ جب تک وہ کسی نتیجے پر نہیں پہنچتے ہمیں احتیاط سے رہنا پڑے گا تاکہ ہم اس بیماری سے بچ سکیں۔ ہمیں کون سے احتیاط کرنے چاہئیں؟ آئیے ہم نیچے جانتے ہیں کہ ہمیں کیا کرنا چاہیے؟

اجتماع یا ہجوم سے دور رہنا چاہیے

کرونا وائرس کیونکہ تیزی سے پھیلنے والا وائرس ہے جو انسانوں سے انسانوں میں منتقل ہونے والا وائرس ہے۔ اس لیئے ہمیں چاہیے کہ ہم ہجوم یا اجتماع سے اجتناب کریں۔ ہمیں ایسے مقامات پر نہیں جانا چاہیے جہاں پر بھیڑ زیادہ ہو۔ مثال کے طور پر شادی، درگاہ، اسکول، ہسپتال یا دوسری ایسی جگہوں پر جیسا کہ ہوٹل، سینیما، مساجد (جب تک اس بیماری کا سایہ ہم سے دور نہیں جاتا، ہمیں گھروں پر ہی عبادات کرنی چاہیںہ) اور کھیل کود کے میدانوں میں۔ ہم سے جتنا ہو سکے ہمیں ایسی جگہوں سے دور رہنا چاہیے۔

ہاتھ نہیں ملانا چاہیے

ہم جہاں پر بھی ہوں، گھر، دفتر، دکان یا کسی اور جگہ پر، ہمیں ایک دوسرے سے ہاتھ نہیں ملانا چاہیے کیونکہ اس سے بھی وائرس پھیلتا ہے۔ ہم جہاں پر بھی بیٹھیں وہاں ایک دوسرے سے فاصلہ رکھنا چاہیے۔ ہمیں ایک ذمہ دار شہری بن کر اپنے شہروں کو ایسی خطرناک بیماری سے بچانا ہوگا۔ اگر آپ کسی دوست یا مہمان سے ملنا چاہیں تو صرف دور سے ہاتھ جوڑ کر سلام کریں اور حقیقت میں ہماری ثقافت کے تحت بھی ملنے کا یہی طریقہ ہے۔

ماسک استعمال کرنا چاہیے

اگر آپ باہر آتے جاتے رہے ہیں تو آپ ماسک کا استعمال کریں۔ اس سے بھی آپ اس وائرس محفوظ رہ سکتے ہیں۔ ماسک کا استمعال انتہائی اہم ہے جو ہمیں ہر حال میں کرنا چاہیے۔ آپ ماسک کے لیئے حکومت کی طرف نہ دیکھیں۔ اپنا کچھ کریں۔

بار بار صابن سے ہاتھ دھونا چاہیے

آپ بار بار اپنا ہاتھ صابن سے دھوئیں تاکہ آپ صاف رہ سکیں۔ آپ اپنے آپ کو جتنا صاف رکھیں گے، یہ وائرس اتنا زیادہ آپ سے دور بھاگے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں