ہمیں بتایا جائے ملک کو کون چلا رہا ہے؟ شیری رحمان

کراچی (ویب ڈیسک) رہنما پیپلزپارٹی شیری رحمان نے وزیرِاعظم عمران خان کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں بتایا جائے کہ ملک کون چلا رہا ہے۔ سینیٹ کے اجلاس کے دوران شیری رحمان کرونا وائرس سے متعلق حکومتی پالیسی پر آگ بگولہ ہو گئیں۔
ان کا کہنا تھا کہ وزیرِاعظم عمران خان لاپتہ ہوگئے ہیں۔ ان کے ہمراہ ان کی پالیسی بھی لاپتہ ہوگئی ہے۔ ہمیں یہ بتایا جائے کہ وزیرِاعظم کہاں ہیں اور ملک کو کون چلا رہا ہے؟ کرونا وائرس سے متعلق انہوں نے کہا کہ ملک میں موجودہ وبائی صورتحال جنگ سے بھی خراب ہے جس سے نمٹنے کے لئے وفاقی حکومت کے پاس کوئی پالیسی موجود نہیں ہے۔ ہمیں ہر وقت اٹلی کا کیوں بتایا جارہا ہے؟ اٹلی سے غلطیاں ہوئی ان کی گنجائش پاکستان میں نہیں ہے۔
اٹھارویں آئینی ترمیم کا تذکرہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اٹھارویں ترمیم کے بعد صوبے خودمختیار ضرور ہوئے ہیں لیکن اس کا یہ مقصد قطعی نہیں ہے کہ وہ اپنے راستے سے سب کچھ کررہے ہیں۔ صوبے ریاست نہیں ہیں۔ کرونا وائرس کے دوران یہ تاثر سامنے آیا ہے کہ ہر صوبہ اپنے طور پر مختلف انداز میں وبائی صورتحال سے نمٹنے کی کوششیں کررہا ہے اور وفاقی حکومت کا کوئی نام و نشان نہیں دکھائی دے رہا ۔
خیال رہے کہ گذشتہ روز قومی اسمبلی کے اجلاس میں بھی وزیرِاعظم شریک نہیں تھے تاہم آج ہونے والے سینیٹ اجلاس سے بھی وزیرِاعظم غائب ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں