سندھ بھر میں میٹرک اور انٹر کے امتحانات منسوخ، طلبہ کو پروموٹ کرنے کا اعلان

کراچی، ویب ڈیسک

سندھ میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیشِ نظر پہلی سے آٹھویں جماعت کے بعد میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات بھی منسوخ کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

کراچی مین پریس کانفرنس کرتے ہوئےوزیر ِتعلیم سندھ نے طلبہ کو امتحان کے بغیر اگلی جماعت میں پروموٹ کرنے کا اعلان کردیا اور کہا کہ پرانے نتیجے کی بنیاد پر نویں کا طالب علم دسویں اور دسویں کا گیارہویں کلاس میں چلا جائے گا۔

میٹرک کے طلبہ کا رزلٹ نویں جماعت اور انٹرکے طلبہ کا نتیجہ گیارہویں کے رزلٹ کی بنیاد پر تیار کیا جائے گا۔

تمام طلبہ کے نمبرز میں 3 فیصد کا اضافہ بھی کیا جائے گا۔ پچھلے سال کسی پرچے میں فیل ہونے والوں کو اس مضمون میں پاسنگ مارکس دے دیے جائیں گے۔

انہوں نےکہا کہ امتحانات نہ لینے کا فیصلہ سندھ حکومت کی تعلیمی اسٹیئرنگ کمیٹی نے کیا ہے اور بچوں کو اگلی جماعت میں پروموٹ کرنے کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے لیکن طلبہ کو اگلی جماعت میں پروموٹ کرنے کے لیے قانون تبدیل ہوگا کیونکہ امتحانی بورڈ کے موجودہ قانون کے تحت طلبہ کو بغیر امتحان پروموٹ نہیں کرسکتے۔

وزیرتعلیم سندھ نے بتایا کہ طلبہ کی پرسنٹیج تبدیل کی جائے گی تاکہ انہیں اگلی کلاس میں داخلہ لینے میں پریشانی نہ ہو۔

واضح رہے کہ سندھ میں اس سے قبل صرف پہلی سے آٹھویں کلاس کے طلبہ کو پروموٹ کرنے کافیصلہ کیا گیا تھا۔

وزیرِتعلیم سندھ کا کہنا تھا کہ اسکولوں کو بند نہیں رکھا جاسکتا، بچوں کی تعلیم کو بھی دیکھنا ہے، اسی لیے کچھ دنوں میں آن لائن تعلیمی نظام کا اعلان کرنے جارہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں