وزیرِ قانون فروغ نسیم ایک مرتبہ پھر اپنے عہدے سے مستعفی

کراچی، ویب ڈیسک

وفاقی وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم نے ایک مرتبہ پھر اپنے منصب سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف دائر صدارتی ریفرنس کو چیلنج کرنے والی درخواستوں کی سماعت 2 جون کو ہوگی جس میں وفاقی کی نمائندگی کرنے کے لیے فروغ نسیم اپنے عہدے سے مستعفی ہوئے۔

بعد ازاں فروغ نسیم نے بھی مستعفی ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان نے میرا استعفیٰ منظور کر لیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ استعفیٰ وزیراعظم عمران خان کے کہنے پر دیا، ساتھ ہی اپنے اوپر اعتماد کرنے کے لیے وزیراعظم کا شکریہ ادا کیا۔

یاد رہے کہ انور منصور خان کے مستعفی ہونے کے بعد نئے اٹارنی جنرل اٹارنی جنرل خالد جاوید خان نے سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ سے متعلق کیس میں حکومت کی جانب سے پیروی کرنے سے معذرت کر لی تھی۔

خیال رہے اس سے قبل فروغ نسیم 26 نومبر کو سپریم کورٹ میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے عہدے کی مدت سے متعلق کیس کی پیروی کے لیے وزیر قانون کے عہدے سے مستعفی ہوگئے تھے۔
تاہم صرف 2 روز بعد 29 نومبر کو ان کی عہدے پر واپسی ہوگئی تھی اور ایک مرتبہ پھر انہوں نے وزیر قانون کا منصب سنبھال لیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں