لیاری: عمارت گرنے سے 22 اموات ہوگئیں، مزید افراد کے دبے ہونے کا خدشہ

کراچی، ویب ڈیسک

کراچی کے علاقےلیاری میں گرنے والی عمارت کے ملبے سے مزید لاشیں نکالنے کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 22 ہوگئی جبکہ ریسکیو حکام کے مطابق مزید لوگوں کے ملبے تلے دبے ہونے کا اندیشہ ہے۔

گرنے والی عمارت کا ملبہ ہٹانے اور امدادی کارروائی جس کے حوالے سے حکام نے دعوی کیا تھا کہ یہ کام 24 گھنٹوں میں مکمل ہوجائے گا اب بھی جاری ہے۔

اطلاعات کے مطابق گزشتہ روز ڈی آئی جی جنوب شرجیل کھرل نے بتایا تھا کہ ’مجموعی طور پر 19 افراد کی لاشیں نکال لی گئیں ہیں اور ان سب کو سول اسپتال کراچی منتقل کیا گیا تھا جہاں ان کے اہل خانہ نے ان کی شناخت کی ہے‘۔

تاہم آج کی تازہ اطلاعات کے مطابق مزید 3 افراد کی لاشیں ملبے سے نکال لی گئی ہیں۔

واضح رہے کہ 3 روز قبل کراچی کے علاقے لیاری میں 5 منزلہ رہائشی عمارت منہدم ہونے کے نتیجے میں دو افراد جاں بحق اور متعدد افراد زخمی ہوگئے۔

عمارت لیاری کے علاقے نیا آباد کی لیاقت کالونی میں کھوکھر کچن والی گلی میں منہدم ہوئی۔

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ترجمان علی مہدی کاظمی کے مطابق لیاری میں منہدم ہونے والی عمارت خطرناک قرار دی گئیں عمارتوں میں شامل تھی لیکن اس کے باوجود عمارت کو مسمار نہیں کیا گیا۔

ایس بی سی اے حکام نے عمارت خالی کرنے کے لیے 6 ماہ قبل ہی نوٹسز بھی جاری کیے تھے اور 2 ماہ قبل بجلی اور گیس کنکشن منقطع کرنے کی بھی سفارش کی گئی تھی لیکن انتظامیہ کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں