وائرس بڑھتے ہی پنجاب میں قرنطینہ مراکز کی بندش کا آغاز

کراچی (ویب ڈیسک) پنجاب میں صوبائی حکومت کے زیرِ اہتمام چلنے والے قرنطینہ مراکز کی بندش کا آغاز کردیا گیا ہے۔ صوبائی حکومت کے مطابق کرونا وائرس سے نمٹنے کے لئے حکمتِ عملی میں تبدیلی کی گئی ہے جس کے باعث قرنطینہ مراکز بند کیے جا رہے ہیں۔ روزنامہ ڈان نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ اب تک لاہور میں 6 قرنطینہ مراکز بند کیے جا چکے ہیں۔
صوبائی حکومت کا کہنا ہے کہ نئی حکمتِ عملی کی روشنی میں بیرونی ممالک سے آنے والے مسافرین کی ہوائی اڈے پر کرونا وائرس تشخیص نہیں کی جائے گی تاہم برقی آلات کے ذریعے ان کا درجہِ حرارت دیکھا جائے گا۔ کرونا وائرس کی تشخیص مثبت ہونے کی صورت میں مسافرین کو اپنے گھروں کے اندر ہی آئسولیٹ ہونے کی اجازت دے دی جائے گی۔ صوبائی حکومت کے موقف میں مزید کہا گیا ہے کہ مستقبل میں کرونا وائرس کے متاثرین بڑھ جانے کی صورت میں دوبارہ قرنطینہ مراکز بحال کیے جا سکتے ہیں۔

دوسری جانب قرنطینہ مراکز بند ہونے پر پنجاب بھر کے عوامی حلقوں میں شدیدتشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ روزنامہ ڈان نے شایع کردہ رپورٹ میں دفتری ذرائع کی جانب اشارہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ان کے مطابق صوبائی حکومت کا ایسا فیصلہ زمینی حقائق کے منافی ہے جو کرونا وائرس کی صورتحال کو مزید خراب کر سکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں