کراچی میں احساس پروگرام کے دفتر پر دستی بم حملہ، ایک شخص جاں بحق اور 8 زخمی

کراچی، ویب ڈیسک

کراچی کے علاقےلیاقت آباد میں کورونا لاک ڈاؤن متاثرین کو رقوم دینے کے سرکاری احساس پروگرام میں بم حملے کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق جب کہ 6 افراد زخمی ہوگئے۔

ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم راو کے مطابق لیاقت آباد نمبر 10 میں واقع ریاض گرلز کالج میں گزشتہ کئی ماہ سے جاری وفاقی حکومت کے احساس پروگرام میں کورونا وائرس لاک ڈاؤن کے مستحقین کو رقوم دی جا رہی تھیں۔

انہوں نے بتایا کہ آج صبح 11 بج کر 40 منٹ پر نامعلوم ملزمان فلائی اوور کے اوپر سے گرلز کالج کے گیٹ پر دستی بم پھینک کر فرار ہوگئے جس کے نتیجے میں خوفناک دھماکہ ہوا اور وہاں موجود افراد زخمی ہوئے۔

اسسٹنٹ پولیس سرجن عباسی شہید اسپتال ڈاکٹر محمد سلیم کے مطابق دھماکے کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق جب کہ 6 افراد زخمی ہوئے۔

دھماکے میں جاں بحق ہونے والے نوجوان کی شناخت کاشف کے نام سے ہوئی ہے جو ناظم آباد کا رہائشی تھا جس کی عمر 25 سال ہے۔

گورنرسندھ عمران اسماعیل نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر دستی بم حملہ کے حوالے سے کہا کہ احساس دفتر کےقریب حملےمیں ملوث عناصرکو معاف نہیں کیا جائےگا اور دہشت گردوں کو فوری گرفتار کیا جائے گا۔

عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ پولیس فوری ایکشن میں نظر آنی چاہیے، نہ جانےکس کواحساس پروگرام سےتکلیف ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں