بلاول بھٹو اور فضل الرحمان کی ملاقات، مستقبل کے سیاسی لائحہ عمل پر بات چیت


اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمیں بلاول بھٹو زرداری نے جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی ہے، ملاقات میں راجہ پرویزاشرف، خورشید شاہ، مولانا عبدالغفور حیدری اور مولانا عبدالواسع شریک تھے، ملاقات کے دوران اہم ملکی سیاسی امور اور مستقبل کے سیاسی لائحہ عمل پر بات چیت کی گئی۔ اس موقعے پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمیں بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ جنرل ضیاء الحق کے خلاف جب تحریک چلی تو ایم آر ڈی میں پیپلز پارٹی اور جی یو آئی ساتھ تھے، جب مشرف کے خلاف احتجاج ہوئے تب بھی ہم ساتھ تھے، اور آج جب کٹپتلیوں کی پاکستان میں جمہوریت کو نقصان ہو رہا ہے انسانی اور معاشی حقوق کو نقصان ہو رہا ہے تب ہمیں ایک بار پھر مل کر کام کرنا پڑیگا اور عوام کو ان مسائل نے نکالنا پڑیگا ، ہمارے لیئے موجودہ چیلینج یہ عوام دشمن بجٹ ہے جو کہ میں سمجھتا ہوں اس ملک کے لیئے معاشی خودکشی ہے
اس موقعے پر مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ غریب انسان مصیبت میں ہے اور آج وہ بازار میں راشن خریدنے کے قابل نہیں رہا ہے، وہ اس بجٹ کے بعد شاید بجلی اور گیس کے بل بھی ادا نہیں کر سکے گا، ہم عام آدمی کے حق کے لیئے متحد ہیں اور میدان میں اترنے کو تیار ہیں ۔ ان کا کہنا تھا اس وقت جو بجٹ پیش ہئا ہے وہ ملک دشمن اور غریب دشمن بجٹ ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں