ایل این جی کیس میں مفتاح اسماعیل کی سندھ ہا ئی کورٹ سے حفاظتی ضمانت منظور

کراچی:(ویب ڈیسک) نیب کی گرفتاری سے بچنے کے لیے سابق مشیر خزانہ اور رہنما ن لیگ مفتاح اسماعیل نے سندھ ہائی کورٹ سے حفاظتی ضمانت حاصل کر لی۔ مفتاح اسماعیل کی جانب سے سندھ ہائیکورٹ دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ نیب کی جانب سے وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے ہیں لہذا حفاظتی ضمانت منظور کی جائے۔سابق مشیر خزانہ نے درخواست میں مؤقف اختیار کیا تھا کہ نیب کے وارنٹ گرفتاری غیر قانونی ہیں اور نیب حکام ہراساں کر رہے ہیں۔رہنما ن لیگ کی جانب سے درخواست میں کہا گیا ہے کہ عدالت ضمانت دے، نیب کے سامنے پیش ہونے کو تیار ہوں۔سندھ ہائیکورٹ نے مسلم لیگ ن کے رہنما مفتاح اسماعیل کی حفاظتی ضمانت کی درخواست 25 جولائی تک منظور کرتے ہوئے انہیں 5 لاکھ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیدیا۔عدالت کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ سابق ایم ڈی پی ایس او عمران شیخ کی حفاظتی ضمانت کی درخواست بھی 5 لاکھ روپے کے مچلکے کے عوض منظور کر لی گئی ہے۔سندھ ہائیکورٹ میں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ چھاپے مارنے کی کوئی ضرورت نہیں تھی کیونکہ نیب نے جب بھی بلایا پیش ہوا ہوں، مجھے گزشتہ روز تین بجے کے بعد نوٹس ملا تھا۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری کے حوالے سے بات کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل نے کہا کہ شاہد خاقان عباسی جیسا مخلص انسان کبھی پاکستان کو نہیں ملا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں