ڈہرکی میں بس نے بچے کو کچل دیا، 5 گھنٹے تک پوسٹ مارٹم نا ہونے پر ورثا کا ہسپتال انتظامیا کے خلاف احتجاج

ڈہرکی (رپورٹ: جعفر شیخ) ڈہرکی میں تیز رفتار مسافر بس نے بچے کو کچل ڈالا ، جس کی شناخت ندیم کے نام سے ہوئی ہے، بچہ موقعہ پر ہی دم توڑ گیا ڈرائیور بس چھوڑ کر فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔ مسافر بس رحيم یار خان سے سکھر جا رہی تھی ، حادثا اینگرو ٹی چوک پر پیش آیا ۔ حادثے کے بعد پولیس موقع پر پہنچ گئی اور لاش کو ہسپتال منتقل کیا گیا۔ سول ہسپتال میں ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے لاش پانچ گھنٹے تک ہسپتال میں پڑی رہی، جس پر بچے کے لواحقین نے احتجاج کیا۔ میڈیا کے پہنچنے کے بعد انتظامیہ حرکت میں آ گئی اور لاش کو پوسٹ مارٹم کے کے بعد ورثاکے حوالے کر دیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں