پریانکا کیخلاف شیریں مزاری کا یونیسیف کو خط

وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے اقوام متحدہ کے زیلی ادارے یونیسف سے پریانکا چوپڑا کو بطور خیرسگالی سفیر برطرف کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ بالی وڈ اداکارہ پریانکا چوپڑا رواں برس فروری میں بھارت کے پلوامہ حملے پر جنگ کو بڑھاوا دینے پر تنقید کا شکار بنیں اور اسی وجہ سے چند روز قبل لاس اینجلس میں منعقد ایک بیوٹی ایونٹ میں بھی انہیں پاکستان نژاد امریکی خاتون نے ‘منافق’ کہا تھا۔ یونیسف کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ہینریٹا فور کو وفاقی وزیر شیریں مزاری کو ایک خط لکھا ہے جسے انہوں نے ٹوئٹر پر بھی شیئر کیا۔ وفاقی وزیر شیریں مزاری اپنے خط میں لکھتی ہیں کہ یونیسیف نے بھارتی اداکارہ پریانکا چوپڑا کو امن کا سفیر مقرر کیا ہے لیکن انہوں نے بھارتی سرکار کے ظلم اور ہتھکنڈوں کی کھل کر حمایت کی۔ خط میں لکھا گیا کہ بھارتی اداکارہ کا بطور امن کے سفیر رویہ خود امن کے خلاف ہے کیونکہ اداکارہ نے پاکستان پر جوہری حملے کی دھمکی کی بھی کھل کر تائید کی۔ خط کے مطابق پریانکا کی عالمی قوانین سے روگردانی اقوام متحدہ کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کے مترادف ہے لہٰذا امن کی نام نہاد سفیر کی جانب سے جوہری جنگ کی تائید اقوام متحدہ کے منصب کے خلاف ہے۔ شیریں مزاری نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کہا کہ جنگی جنون میں مبتلا اس خاتون (پریانکا) کو امن کی سفیر کے منصب سے فوری ہٹایا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں