اپوزیشن جماعتوں کی 29 اگست کو ہونے والی اے پی سی موخر

اسلام آباد: اپوزیشن کی رہبر کمیٹی نے 29 اگست کو ہونے والی آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) موخر کر دی۔ اجلاس میں چارٹر آف ڈیمانڈ دیا گیا نہ ہی اسلام آباد لاک ڈاؤن پر اتفاق ہوسکا۔ رہبر کمیٹی کے سربراہ اکرم درانی نے بتایا کہ شہباز شریف کی طبعیت ناساز ہونے کی وجہ سے اے پی سی موخر کی گئی ہے۔ چارٹر آف کے لیے تمام جماعتوں نے تجاویز دے دی ہیں۔ایک سوال پر اکرم درانی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا قوم سے خطاب ان کی مایوسی کو ظاہر کرتا ہے۔سید نیر حسین بخاری اور احسن اقبال نے کہا کہ اکتوبر میں اسلام آباد کے لاک ڈاؤن کا فیصلہ جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی ف) کا ہے، حتمی فیصلہ اے پی سی کرے گی۔ رہبر کمیٹی کے سربراہ نے صدر مملکت کی طرف سے الیکشن کمیشن ممبران کی تقرری کو غیر آئینی قرار دیتے ہوئے ان کے مواخذے کی بھی دھمکی دے دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں