امریکا نے جبرالٹر سے چھوڑے گئے ایرانی آئل ٹینکر کو بلیک لسٹ کردیا

واشنگٹن: امریکا نے جبرالٹر سے چھوڑے گئے ایرانی آئل ٹینکر کو بلیک لسٹ کردیا۔ برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق امریکی وزارت خزانہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہےکہ آئل ٹینکر کو ملک شام میں تیل پہنچانے کے لیے استعمال کیا جارہا ہے۔ امریکی وزارت خزانہ کا مزید کہنا تھا کہ آئل ٹینکر کے ذریعے ایرانی پاسداران انقلاب کو فائدہ پہنچانے کے لیے 2.1 ملین بیرل ایرانی کروڈ آئل بھیجا جارہا تھا جسے امریکا نے دہشت گرد تنظیم قرار دیا ہے۔ امریکی وزارت خزانہ کے حکام کا مؤقف ہےکہ آئل ٹینکر کو ممنوعہ تیل کی فروخت کے لیے استعمال کیا جارہا تھا جس کا مقصد ایران کی دہشت گردی کو فروغ دینے والی بدنام سرگرمیوں کو فنڈنگ کرنا تھا۔ اس حوالے سے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ٹوئٹر پر جاری بیان میں کہا کہ ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے یقین دہانی کرائی تھی کہ یہ آئل ٹینکر شام کی طرف نہیں بھیجا جائے گا تاہم امریکا کے پاس ٹھوس شواہد موجود ہیں کہ آئل ٹینکر شام کے شہر طرطوس کی طرف جارہا ہے، جواد ظریف پر اعتماد بہت بڑی غلطی تھی۔ امریکی وزیر خارجہ نے کسی بھی ملک کی جانب سے آئل ٹینکر کی مدد کرنے کی صورت میں اس ملک پر پابندیاں عائد کرنے کی بھی دھمکی دی۔ امریکا کی جانب سے بلیک لسٹ میں شامل کیے گئے اس آئل ٹینکر کو برطانیہ نے گزشتہ ماہ میں شام کے لیے تیل لے کر جانے پر یورپی یونین کی طرف سے عائد پابندیوں کی خلاف ورزی پر جبرالٹر سے قبضے میں لیا تھا تاہم بعد میں آئل ٹینکر کو ایرانی کی جانب سے شام نہ بھیجے جانے کی یقین دہانی پر چھوڑا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں