نمرتا قتل کیس کی جلد از جلد غیر جانبدار تحقیقات کرائی جائے: ایڈوکیٹ شاہد عباسی.

کراچی ( 8نومبر 2019) پیپلز لائرز فارم کے ڈپٹی انفارمیشن سیکرٹری ایڈوکیٹ شاہد حسین عباسی نے لاڑکانہ کے ڈینٹل کالج کی طالبہ نمرتا چندانی قتل کیس کو تقریبا ایک ماہ گذر جانے کے بعد کوئی پیش رفت نہ ہونے پر شدید تشویش کا اظہار کر تے ہوئے کہا ہے کہ ہمارا ریاست سے سوال ہے کہ ہمیں بتا یا جائے کہ نمرتا قتل کیس میں پیش رفت کیوں نہیں کی جارہی ، اُس کے قاتلوں کو اب تک گرفتار کیوں نہیں کیا گیا، آئی جی سندھ وفاق کے نمائندے ہیں اور وفاقی حکومت کی طرح ان کو بھی عوام کی جان مال اور عزت کی حفاظت کی کوئی پرواہ نہیں ہے، ان خیالات کا اظہا را انہوں نے پیپلز لائرز فارم کراچی ڈویژن کے دفتر سے جاری کردہ بیان میں کیا، ایڈوکیٹ شاہد حسین کا کہنا تھا کہ نمرتا چندانی قتل کیس میں قانونی کاروائی کرنے کے بجائے ٹال مٹول سے کام لیا جا رہا ہے ،شروع میں نمرتا کے قتل کو خودکشی کا نام دیا گیا لیکن پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد یہ بات واضح ہوگئی ہے کہ نمرتا کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا، پیپلز پارٹی لائرز فارم کراچی ڈویژن آئی جی سندھ سے مطالبہ کرتی ہے کہ نمرتا کے قتل کیس کی جلد از جلد غیر جانبدار تحقیقات کرائی جائے اور قاتلوں کو گرفتار کر کہ تختہ دار پر لٹکایا جائے ، انہوں نے کہا کہ آئی جی سندھ وفاق کی محبت میں صوبہ سندھ کے ساتھ دشمنی بند کریں ، نمرتا قتل کیس میں ابھی تک کوئی جامع پیش رفت نہ ہونے کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ نمرتا سندھ کی بیٹی ہے، پاکستان تحریک انصاف نے اپنی حکومت کے پہلے دن سے سندھ کے عوام کے حقوق کو غصب کرنا شروع کردیا ہے، تحریک انصاف سندھ کی عوام سے ووٹ نہ دینے کا بدلہ لے رہی ہے ، پی ٹی آئی پیپلزپارٹی کی سندھ میں عوامی مقبولیت کا بدلہ عوام کو پریشان کر کے لے رہی ہے، انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز لائرز فارم نمرتا کے قاتلوں کو کیفرکردار تک پہنچا کر رہی گی اور لواحقین کو انصاف دلوانے کے لیئے اپنی بھرپور کردار ادا کریگی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں