پیپلزپارٹی رکن سندھ اسیمبلی شہناز انصاری بہنوئی کے بھائیوں کے ہاتھوں قتل

کراچی : نوشہروفیروز میں دریا خان مری کے مقام پر پاکستان پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والی رکن سندھ اسمبلی شہناز انصاری قاتلانہ حملہ میں جاں بحق ہوگئیں۔ شہناز انصاری بہنوئی کے چہلم میں شرکت کے لئے گاؤں دل مراد کھوکھر گئی ہوئی تھیں کہ مسلحہ افراد نے فائرنگ کردی،۔ ایم پی اے شہناز انصاری تین گولیاں لگنے سے شدید زخمی ہوئی جنہیں فوری طور پر تشویشناک حالت میں نواب شاہ ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں زخموں کے تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئیں۔

خاندانی ذرائع کے مطابق شہناز انصاری کے بہنوئی ڈاکٹر زاہد کھوکھر کا اپنے بھائیوں کے ساتھ ملکیت کے معاملے پر تنازعہ چل رہا تھا جس کے باعث ان کے بھائیوں نے ایم پی اے کو گاؤں دل مراد کھوکھر آنے سےبھی روک رکھا تھا ۔ آج اسی گاؤں میں ایم پی اے شہناز انصاری کے بہنوئی کا چہلم تھا جس میں مسلحہ افراد نے فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں شہناز انصاری کو تین گولیاں لگیں۔
وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے نوٹیس لیتے ہوئے ایس ایس پی اور ڈپٹی کمشنر نوشہروفیروز سے فوری رپورٹ طلب کر لی ہے۔ شہناز انصاری کی ہلاکت پر چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں