لاہور، جیو اور جنگ گروپ کے مالک میر شکیل الرحمٰن اراضی کیس میں گرفتار

لاہور (ویب ڈیسک) قومی احتساب بیورو نے اراضی کیس میں جیو اور جنگ گروپ کے مالک میر شکیل الرحمٰن کو گرفتار کرلیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق میر شکیل الرحمٰن کے خلاف 54 کنال زمین کاکیس بیورو میں زیرِ تفتیش تھا تاہم آج وہ اس مقدمے میں دوسری مرتبہ قومی احتساب بیورو میں پیش ہوئے۔ ترجمان قومی احتساب بیورو کا کہنا ہے کہ میر شکیل الرحمٰن بیورو کی جانب سے تفتیش کے دوران پوچھے گئے سوالات پر مطمئن کرنے میں ناکام رہے جس کے باعث ان کو گرفتار کیا گیا ہے۔

قومی احتساب بیورو کے مطابق 1986 میں اس وقت کے وزیرِ اعلیٰ پنجاب نواز شریف کی جانب سے میر شکیل الرحمٰن کو لاہور کے جوہر ٹائون کے فیز ٹو، بلاک ایچ میں 54کنال زمین غیر قانونی طور پر لیز پر دی گئی تھی۔ اس حوالے سے بیان رکارڈ کروانے کے لئے بیورو نے میر شکیل الرحمٰن کو 5 مارچ کو طلب کیا تھا۔ پیشی کے دوران میر شکیل الرحمٰن نے قومی احتساب بیورو کو بتایا کہ یہ زمین انہوں نے ایک نجی مالک سے خریدی تھی جس کے ثبوت بھی ان کے پاس موجود ہیں۔
آج دوسری پیشی کے موقع پر قومی احتساب بیورو نے میر شکیل الرحمٰن کو گرفتار کر لیا۔ میر شکیل الر حمٰن کا کہنا تھا کہ وہ پرامید ہیں کہ عدالتیں اور قومی احتساب بیورو اس کیس میں منصفانہ فیصلہ دیں گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں