دادو سول ہسپتال میں علاج نا ہونے پر حاملہ عورت کا بچہ ضایع، ورثہ کا احتجاج

دادو( رپورٹ فیاض جعفری) دادو سول ہسپتال میں 4 روز سے داخل حاملہ خاتون کلثوم قمبرانی کو لیڈی ڈاکٹر نے آپریشن کے بجائے کلینک آنے کا مشورہ دیا،جس پر بچہ عورت کے پیٹ میں ہی چل بسا۔ واقع کے بعد ورثہ نے احتجاج کرتے ہوئے بتایہ کے سول ہسپتال دادو کی لیڈی ڈاکٹر نے کلثوم قمبرانی کا آپریشن کرنے کے بجائے ڈسچارج کرکے رکشہ میں بٹھا کر گھر روانہ کردیا ، جس پر حاملہ خاتون کی حالت مزید بگڑ گئی اور بچے کی جان چلی گئی۔ ورثہ نے الزام عائد کیا کہ لیڈی ڈاکٹر نے کلثوم کا علاج کرنے کے لئے اپنی پرائیویٹ کلینک آنے کا مشورہ دیا، کلینک نہ جانے پر لیڈی ڈاکٹر نے علاج کرنے سے انکار کیا، واقع کا فوری نوٹس لیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں