غربت کے خاتمے کی سروےمیں میھڑ کے کئی گاؤں محروم ہونے کا انکشاف

دادو(رپورٹ: فیاض جعفری) تحصیل میہڑ میں یونین کونسل چارو کے کئی گاؤں غربت کے خاتمے کی سروے سے محروم،  گاؤں والوں کی جانب سے وفاقی حکومت کے   خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ اس موقعے پر  مظاہرین نے الزام عائد کیا کہ  این ایس ای آر کی ٹیم کی جانب سے فی گھر سے 5000 روپے بطور رشوت لے کر  رجسٹریشن کی جارہی ہے۔ ادارہ کرپشن کی  نذر ہوگیا ہے۔  غربت کے خاتمے کے متعلق ہونے والی سروے میں انچارج احسان کھوسو  اور اس کی ٹیم نے یونین کونسل چارو کے گاؤں فیض محمد کولاچی، گاؤں اعتبار چانڈیو،  گاؤں فیض محمد کھوسو،  گاؤں چارو  اور  دیگر گاؤں کی سروے نہیں کی۔  دوسری جانب یونائیٹڈ ٹی وی کی جانب سے رابطہ کرنے پر احسان کھوسو  کا کہنا تھا کہ میں کچھ عرصہ قبل متعلقہ منصوبے سے مستعفیٰ ہو چکا  ہوں جس کے بعد میرا  اس سروے کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے  تاہم اس طرح کے احتجاج میرے خلاف پروپیگنڈے کے  علاوہ اور کچھ نہیں ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں