سکھر، ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے احتجاج، او پی ڈی بند

سکھر(رپورٹ۔ علی کھوسو) ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے زیرِ اہتمام مطالبات تسلیم نہ ہونے پر30ویں روز بھی احتجاجی سلسلہ جاری رکھا گیا۔ اس موقع پر ڈاکٹرز کی جانب سے او پی ڈی کا مکمل بائیکاٹ کرکے ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ کے سامنے علامتی بھوک ہٹرتال اوردھرنا دیا گیا۔ مظاہرین کی رہنمائی ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر عبدالمجید جتوئی کر رہے تھے جبکہ مظاہرے میں ڈاکٹر فیاض ملاح ،لعل ملک ،ڈاکٹر نازش و دیگر بھی شامل تھے ۔

ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ ہم گذشتہ گیارہ ماہ سے تنخواہ سے محروم ایمانداری سے اپنی ذمہ داریاں انجام دے رہے ہیں لیکن ہمارا صرف ایک جائز مطالبہ تنخواہ ہے اور وہ بھی پورا نہیں ہو رہا ۔ تنخواہ نہ ملنے کے باعث ہسپتال میں کام کرنے والے31سے زائد ڈاکٹرز پریشان حال ہیں لیکن وائس چانسلر ہمیں ہر بار جھوٹے دلاسے اور وعدے کررہی ہے۔
مظاہرہ کرنے والے ڈاکٹرز نے صوبائی وزیرِ صحت، سیکریٹری و دیگر حکامِ بالا سے فوری نوٹس لیکر ان کے مسائل حل کرنے کا مطالبہ کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں