ملیر، مراد میمن گوٹھ میں بند ہسپتال کی بحالی کا اعلان

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی) مراد میمن گوٹھ میں غیر سرکاری تنظیم ہینڈس کے تحت چلنے والے سرکاری ہسپتال میں بند پڑے منشیات اور نفسیاتی مریضوں کے علاج کے لیے وارڈ کو دوبارہ بحال کر کے علاج کی تمام تر سہولیات دی جائیں گی۔ ایسا فیصلہ صوبائی وزیر حاجی غلام مرتضیٰ بلوچ، ایم این اے آغا رفیع اللہ اور ہینڈس کے پروجیکٹ ڈائریکٹر، ڈاکٹرز کے رہنما خلیل احمد شیخ، ایم ایس محمد ڈہیپر کے ساتھ ہسپتال کے دوررے کے بعد متعقد کردہ اجلاس میں کیا گیا۔
اس موقع پر ایم این اے آغا رفیع اللہ نے کہا کہ مراد میمن گوٹھ کے ہسپتال میں علاج کی تمام تر سہولیات بہتر نمونے کے ساتھ فراہم کی جارہی ہیں۔ ایمرجنسی نافذ ہے۔ بہت جلد مقامی لوگوں کے لیے بند پڑے وارڈز کو دوبارہ بحال کیا جائے گا۔ ہماری کوشش ہے کہ ملیر کے مکینوں کو علاج کی بہتر سہولیات کی فراہمی ممکن بنائی جائے۔ اجلاس میں ہینڈس انچارج خلیل واڈیلو، علی بخش خاصخیلی، سلیم جے میمن، جام کوثر، جاوید شیخ اور دیگر بھی شریک تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں