ملیر، میمن گوٹھ میں منشیات و نفسیات وارڈ کی بحالی کی تیاریاں

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی) ماضی میں ملیر کے ایس ایس پی اور موجودہ اے ڈی آئی جی کراچی غلام نبی میمن کی جانب سے منشیات اور نفسیاتی امراض میں مبتلہ مریضون کے علاج کیلئے میمن گوٹھ کی سرکاری ہسپتالوں میں وارڈ قائم کیا گیا تھا جو ہسپتال انتظامیہ کی عدم دلچسپی کے باعث بند کردیا گیا۔ بند کیئے گئے وارڈ کو دوبارہ بحال کرنے کیلئے صوبائی وزیر غلام مرتضٰی بلوچ اور غیرسرکاری تنظیم ہینڈز کے ذمہ داران نے کوششیں تیز کردی ہیں۔
اس سلسلے میں منتخب نمائندوں نے میمن گوٹھ ہسپتال کا دورہ کیا تھا۔ ڈی سی ملیر کے دفتر میں ایک اجلاس ہوا جس میں منتخب نمائندوں مرتضٰی بلوچ، سلمان عبداللہ مراد، جام عبدالکریم کے علاوہ ضلعی افسران اور ہینڈز کے ذمہ داران نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ اجلاس میں میمن گوٹھ سرکاری ہسپتال میں وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے منشیات اور نفسیاتی امراض میں مبتلا لوگوں کے علاج کیلئے مختص وارڈ کو ازسرِنو بحال کرنے پر غٖور کیا گیا اور فیصلہ کیا گیا کہ ایک ہفتے کے اندر تمام تر تیاریوں کا جائزہ لیکر وارڈ کو بحال کیا جائیگا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں