لاڑکانہ، قوائد و ضوابط کی خلاف ورزی پر دوبارہ لاک ڈاؤن

لاڑکانہ (نامہ نگار، نور احمد عباسی) لاک ڈاؤن میں نرمی ہوتے ہی شہریوں و تاجروں نے حکومت کی جانب سے جاری کردہ قوائد و ضوابط کی دھجیاں اڑا دیں۔ انتظامیہ نے احتیاطی تدابیر نہ اپنانے پر تمام تر کاروباری مراکز، اور دکانیں دوبارہ بندکروا دیئے۔ حکومتِ سندھ کی جانب سے 50ویں روز لاک ڈاؤن میں نرمی کرتے ہوئے تاجروں کو کاروبار کھولنے کی اجازت دی گئی جس پر لاڑکانہ میں تجارتی سرگرمیاں شروع ہو گئیں۔ انتظامیہ نے پولیس کے زور پر تمام بازاریں و دکانیں بند کرا دیئے۔
دوسری جانب لاک ڈاؤن میں نرمی کو دیکھ کر شہری اور تاجر بغیر ماسک کے اپنے فرائض انجام دے رہے تھے اور کرونا وائرس سے بچاؤ کے لئے حفاظتی اقدامات نہیں کئے گئے تھے۔ بینک، دکانیں، سبزی فروش و پھل فروشوں کی دکانوں پر سماجی فاصلے کا تصور ہی نہیں تھا ۔
محلہ علی گوہر آباد اور کھچی محلے میں خواتین سمیت 6 افراد کے جاں بحق ہونے پر انتظامیہ کی جانب سے ان کے تمام ورثاء کے نمونے لینے کے بعد علاقے میں خوف پھیل گیا اور کئی گلیاں سیل کر دی گئیں ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں