میاں الیاس عباسی کی کراچی میں ڈومیسائل جاری کرنے کا رکارڈ حاصل کرنے کے لئےکراچی کے کمشنر اور ڈی سیز کو درخواست ۔

کراچی، ویب ڈیسک

یونائیٹڈ میڈیا پرائیویٹ لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹو ِمیاں الیاس عباسی نے کراچی کے کمشنر اور کراچی کے چھ اضلاع کے ڈپٹی کمشنر زسے 2008 سے 2020 کی مدت تک ڈومیسائل اور پی آر سی( Permanent Residence Certificate) جاری کرنے کا رکارڈ حاصل کرنے کے لیے درخواست دائر کردی ہے۔

درخواست کے مطابق میاں الیاس عباسی نے جمعرات کے روز کمشنر کراچی اور کراچی کے تمام ڈپٹی کمشنرز کو اپنے متعلقہ دفاتر سے سندھ ٹرانسپیرنسی اینڈ رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ 2016 کے تحت ڈومیسائل اور پی آر سی جاری کرنے کی تفصیلات حاصل کرنے کے لئے درخواستیں جمع کرائیں ہیں۔

انہوں نے درخواست میں ان رہائشیوں کی کُل تعداد اور فہرست طلب کی ہے، جِن کی دفتر نے 2008 سے 2020 کے دوران ڈومیسائل اور پی آر سی جاری کیا تھا۔

درخواست کے مطابق متعلقہ / معاون ریکارڈ کی فوٹو کاپیاں جاری کرنے کی بھی درخواست کی ہے جیسے رہائشی سرٹیفکیٹ ووٹر لسٹ میں درج ہے جس میں تعلیمی سرٹیفکیٹ اور دیگر کاغذات شامل ہیں۔

تاہم میاں الیاس عباسی نے درخواست کی کاپی چیف جسٹس آف سندھ ہائیکورٹ اور چیف سکریٹری سندھ کو بھی ارسال کردی ہے۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل جعلی ڈومیسائل اور پی آر سی کے اجراء کے خلاف ایک مہم ڈاکٹر قاسم راجپر کے ذریعے سوشل میڈیا پر شروع کی گئی تھی جو اَب تک پورے صوبے میں پھیل گئی ہے۔

سوشل میڈیا ویب سائٹس پر خاص طور پر ٹویٹر اور فیس بُک پر سندھ کے نوجوان جعلی ڈومیسائلز کے رکارڈ شیئر کررہے ہیں اور وہ یہ دعویٰ کر رہے ہیں کہ دوسرے صوبے سے آنے والے متعدد افراد کو سرکاری ملازمتوں اور سندھ کے رہائشیوں کے کوٹے پر داخلہ مل گیا ہےجِن کی تحقیقات کرکے سرکاری ملازمتوں سے فارغ کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں