پیپلزپارٹی کی کل جماعت کانفرنس میں شرکت نہیں کریں گے، سندھ یونائیٹڈ پارٹی

جامشورو (پریس رلیز) سندھ یونائیٹڈ پارٹی کی جانب سے پیپلزپارٹی کی میزبانی میں کل کراچی میں ہونے والی کل جماعتی کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے۔ رہنما سندھ یونائیٹڈ پارٹی سید جلال محمود شاہ نے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ سندھ میں گذشتہ 13 برس سے پیپلزپارٹی کی حکومت ہے جس کے دوران سندھ میں مسلسل ظلم و جبر جاری رہا ہے اور پیپلزپارٹی نے اپنی بدترین کرپشن سے سندھ کو تباہ کر کے رکھ دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ پیپلزپارٹی نے جس موضوع پر کانفرنس بلا رکھی ہے، ہم سمجھتے ہیں کہ وفاق کے ہمراہ پیپلزپارٹی کا بھی سندھ کو نظرانداز کرنے میں اتنا ہی کردار رہا ہے۔
سید جلال محمود شاہ نے مزید کہا ہے کہ سندھ یونائیٹڈ پارٹی صوبائی خودمختاری میں یقین رکھتی ہے لیکن ہم سمجھتے ہیں کہ اٹھارویں ترمیم اس کے لئے ناکافی ہے۔ این ایف سی کے ذریعے وفاق نے سندھ کی مالی خودمختاری پر ڈاکا ڈالا ہے جس کی بھرپور مخالفت جاری رکھیں گے اور اس سے متعلق پیپلزپارٹی اسمبلی کے اندر یا باہر اگر کسی تحریک کا اعلان کرے گی تو اس کا ساتھ دیا جائے گا۔
پیپلزپارٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سید جلال محمود شاہ نے کہا کہ حالیہ دنوں میں سندھ کے اندر جعلی ڈومیسائل بننے کے خلاف تحریک چل رہی ہے لیکن پیپلزپارٹی جعلی ڈومیسائل بنانے والے افسران کو سزا دینے کے لئے کوئی حکمتِ عملی بنانے میں ناکام رہی ہے۔ پیپلزپارٹی سندھ کا صدر نثار کھہڑو بنگالیوں، برمیوں اور دیگر غیر ملکی افراد کو شناختی کارڈ بناکر دینے کا حامی رہا ہے تو دوسری جانب پیپلزپارٹی نے اپنے دورِ حکومت میں سندھ کی زمینیں نیلام کرکے سندھ دشمنی کا ثبوت دیا ہے۔

ان تمام زمینی حقائق کو نظر میں رکھتے ہوئے سندھ یونائیٹڈ پارٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ پیپلزپارٹی کی جانب سے کروائی جانے والی کل جماعت کانفرنس میں شرکت نہیں کی جائے گی۔ خیال رہے کہ گذشتہ روز رہنما پیپلزپارٹی عاجز دھامراہ نے جامشورو میں سندھ یونائیٹڈ پارٹی کے رہنماؤں روشن برڑو اور جگدیش آہوجا کے ساتھ ملاقات کرکے انہیں کل جماعت کانفرنس میں شرکت کی تحریری طور پر دعوت دی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں