ملیر، مرتضیٰ بلوچ سے متعلق تعزیتی ریفرنس کا انعقاد

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی) پاکستان پیپلز پارٹی ملیر کے سابق صدر صوبائی وزیر مرحوم حاجی غلام مرتضیٰ بلوچ کے ایصالِ ثواب کے لیے پیپلز یوتھ آرگنائیزیشن کی جانب سے سومار کنڈانی گوٹھ میں قرآن خوانی اور تعزیتی ریفرنس کا اہتمام کیا گیا۔ اس موقع پر حاجی غلام مرتضیٰ بلوچ کی خدمات کو خراجِ تحسین پیش کیا گیا اور ان کی بخشش و مغفرت کے لیے خصوصی دعائیں کی گئیں۔
تعزیتی تقریب میں پاکستان پیپلز پارٹی ضلع ملیر کے رہنما نعمان عبداللہ مراد،منیر ایوب بلوچ سلیم میمن، عنایت عثمان بلوچ، اعجاز حنیف خاصخیلی، سلیم جے میمن، طاہرگل،آصف شیخ، اظہر کولاچی، سکندر جاموٹ و دیگر پارٹی کارکنان کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ رہنماؤن نے تعزیتی ریفرنس میں حاجی غلام مرتضیٰ کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ غلام مرتضیٰ بلوچ صرف ملیر کے سرگرم رہنما نہیں بلکہ وہ پوری سندھ کے سرگرم صوبائی وزیر تھے۔ عالمی وبا کرونا وائرس کے باعث ہونے والے لاک ڈاؤن کے بعد ان کو ملیر کا فوکل پرسن مقرر کیا گیا جس کے بعد انہوں نے اپنی مصروفیات کو پہلے سے بھی کئی گناہ زیادہ بڑھا دیا اور مسلسل قرنطینہ سینٹر کا دورہ کرتے رہے۔
رہنماؤں کا مزید کہنا تھا کہ انتظامیہ کے ساتھ مسلسل انتظامات کے حوالے سے سرگرم رہے جس کے باعث وہ کرونا وائرس کا شکار ہوئے اور اپنے خالقِ حقیقی سے جا ملے۔ ان کا کارکنان کے ساتھ ہمیشہ محبت کا رشتہ رہا۔ وہ ہمیشہ غریب اور امیر میں کسی قسم کا فرق نہیں رکھتے تھے ۔ یہی وجہ ہے کہ آج پورا ملیر ان کے لئے سوگوار ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں