ملیر، مقتول علی دوست کے ورثاء کو انصاف دیا جائے گا، سندھ چائلڈ پروٹیکشن اتھارٹی

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی) سندھ چائلڈ پروٹیکشن اتھارٹی کے ذمہ داران عدیل احمد شیخ اور محمد آصف متاثرہ خاندان کے پاس پہنچ گئے اور مقتول 8 سالہ معصوم علی دوست کے ورثاء سے تعزیت کے بعد صابر لغاری سے واقعے کے متعلق تفصیلات لیے۔ اس موقع پر انہوں نے واقعے پر افسوس کا اظہار کیا اور وثاء کو یقین دہانی کرائی کہ سندھ چائلڈ پروٹیکشن اتھارٹی ان کے ساتھ کھڑی ہے۔ واقعے کے متعلق مکمل تعاون فراہم کرے گی تاکہ علی دوست سے زیادتی اور ان کے قتل میں ملوث وحشی ملزمان کو کیفرِکردار تک پہنچایا جائے ۔

اس موقع پر عدیل احمد شیخ نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم بالا افسر حافظ نعمان کی ہدایت پر یہاں آئے ہیں۔ معصوم علی دوست کے ساتھ زیادتی کے بعد قتل کا معاملہ انتہائی دلخراش ہے۔ ہم معاملے کا سنجیدگی کے ساتھ جائزہ لے رہے ہیں اور ایس ایچ او اسٹیل ٹاؤن سے بات چیت بھی جاری ہے۔ ملزمان کو جلد از جلد قانونی شکنجے میں لاکر ورثاء کے ساتھ انصاف کیا جائے گا۔
دوسری جانب سجاگ بار تحریک ملیر کے رہنما وکیل بگھیو نے مقتول علی دوست کے گھر پہنچ کر تعزیت کی اور کہا کہ سجاگ بار تحریک واقعے پر پرزور مذمت کرتی ہے اور حکومتِ وقت سے مطالبہ کرتی ہے کہ بچوں کے ساتھ زیادتی میں ملوث تمام تر وحشی درندوں کو بیچ چوراہے پر پھانسی دے کر ورثاء کے ساتھ انصاف کیا جائے تاکہ دوبارہ ایسے واقعات پیش نہ آئیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں