ملیر، ماہیگیروں پر شکار کے دوران اہلکاروں کا تشدد، 2 ماہیگیر ذخمی

ملیر ( رپورٹ، منظورسولنگی) سمندر میں مچھلی کے شکار میں مصروف لٹ بستی کے ماہیگیروں پر پورٹ قاسم میرین سیکیورٹی اہلکاروں کا بد ترین تشدد۔ تشدد کے نتیجے میں 2 ماہیگیر بیدار ولد راجا سلطان اور حسین ولد محمد امین بے ہوش ہو گئے جن کو ساتھی ماہیگیروں نے مقامی ہسپتال پہنچایا ۔ اطلاع پر ماہیگیروں کی بڑی تعداد جمع ہوگئی اور سیکورٹی افسران کے خلاف شدید احتجاج کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ بھوک و افلاس اور بیروزگاری کے باعث سمندر میں مچھلی کا شکار کر کے بچوں کی کفالت کرتے ہیں۔ حدود کا بہانہ بنا کر پورٹ قاسم اہلکار تشدد کا نشانہ بنا رہے ہیں ۔ لاوارث سمجھ کر ظلم کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سمندر میں ترقی کے نام پر مختلف منصوبے قائم کر کے ماہیگیروں کے سمندری راستے بند کردیئے گئے ہیں۔ مظاہرین نے وفاقی اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ماہیگیروں پر تشدد میں ملوث سیکیورٹی اہلکاروں کے خلاف کارروائی کر کے ماہیگیروں کو ماہیگیری کی اجازت دی جائے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں