ملیر، چشمہ گوٹھ کے ہسپتال سے گرفتار چار افراد تاحال آزاد نہ ہوسکے

ملیر (رپورٹ، منظور سولنگی) ہسپتال سے گرفتار چشمہ گوٹھ کے چار نوجوان آزاد نہ ہو سکے۔ کورنگی پولیس نے نوجوانوں پر گواہ بناکر لوٹ مار کا مقدمہ درج کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق کورنگی پولیس کے ہاتھوں جناح ہسپتال سے گرفتار چشمہ گوٹھ کے چار نوجوان آزاد نہیں ہو پائے۔ نوجوانوں کو آزاد کرنے کے لیے ورثاء کی جانب سے کئے گئے احتجاج پر غصہ ہو کر کورنگی عوامی کالونی کے ایس ایچ او نے نوجوانوں پر گواہ بناکر لوٹ مار کا مقدمہ درج کر لیا ہے۔
واقعہ کے خلاف چشمہ ولیج کے مکینوں نے عوامی کالونی پولیس کے ایس ایچ او کے خلاف نیشنل ہائی وے پر پہنچ کر احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے دھرنا دیا اور نعرے بازی کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ ایس ایچ او کو برطرف کر کے بیگناہ گرفتار نوجوانوں کو آزاد کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں