لاڑکانہ، وفاقی حکومت نے کرونا کو کمائی کا ذریعہ بنا رکھا ہے، نثار کھہڑو

لاڑکانہ (نامہ نگار، نور احمد عباسی) پیپلزپارٹی سندھ کے صدر و صوبائی مشیر نثار کھہڑو نے لاڑکانہ کے بی بی آصفہ ڈینٹل کمپلیکس میں قائم کردہ آئسولیشن وارڈ کا دورہ کیا۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر لاڑکانہ نعمان صدیق، ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسر اطہر اور اے ایم ایس انصاف مگسی نے بریفنگ دی۔
دورے کے دوران نثار کھہڑو نے ڈاکٹروں اور افسران کو ہدایت کی کہ کرونا متاثرین کے لئے آئسولیشن وارڈ میں صفائی ستھرائی سمیت دیگر تمام سہولیات میسر کی جائیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وائرس متاثرین کے لئے لاڑکانہ میں 30 بیڈز پر مشتمل آئسولیشن وارڈ قائم کیا گیا ہے جہاں اس وقت تک ایران سے 250 زائرین لاڑکانہ آئے ہیں جن میں سے کسی کو بھی کرونا علامات نہیں ہیں۔ کرونا وائرس کے پیشِ نظر لاڑکانہ میں اگر کوئی متاثر سامنے آیا تو ان کے ٹیسٹ آغا خان سے سندھ حکومت کے خرچ پر کرائے جائینگے۔
وفاقی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت نےکرونا وائرس کو بھی کمائی کا ذریعہ بنادیا ہے۔ وزیرِ اعظم کے مشیر نے دو کروڑ ماسک اسمگل کرکے سنگین جرم کیا۔ وزیرِاعظم کرونا وائرس پر صرف قوم کو “گھبرانا نہیں ہے” کے دلاسے دے رہے ہیں لیکن عملی کام سندھ حکومت کر رہی ہے۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے ایک آواز ہوکر ہمیں ملکر کام کرنا ہوگا۔ ہمیں لوگوں کی جان عزیز ہے اس لئے سندھ حکومت کرونا وائرس کے پیشِ نظر تمام پیشگی احتیاطی تدابیر کر رہی ہے۔ انتظامیہ عوامی مقامات پر قلم 144 کے نفاذ پر سختی سے عمل کرائے اور عوام بھی تعاون کریں کیونکہ یہ سب احتیاطی تدابیر کا حصہ ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں