ملیر، لاک ڈاؤن کےدوران پانی کی قلت کے باعث شہری پریشان

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی ) یونین کونسل پپری کے قدیمی شاہنواز گوٹھ اور صابو خان گبول میں پینے کے پانی کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے۔ حکومتِ سندھ کی جانب سے نافذ کردہ لاک ڈاؤن کے باوجود گھروں سے عورتیں اور بچے باہر نکل کر دور دراز علاقوں سے پانی لانے پر مجبور ہیں۔ اس سلسلے میں گوٹھ کے سماجی رہنما ايڈوکيٹ محمد موسیٰ کولاچی اور وریل خان گبول نے میڈیا کو بتایا کہ ضلع کونسل کراچی سے منظور پانی کی لائن 6 ماہ قبل منظور ہوئی جو تاحال مکمل نہیں ہوسکی۔ ٹھیکیدار کام چھوڑ کر چلا گیا ہے۔ اس وقت ایک طرف کرونا وائرس کا خوف، لاک ڈاؤن کی سختی تو دوسری جانب پانی کی مصنوعی قلت سے زندگی عذاب بن گئی ہے۔ انہوں نے پانی لائن ہنگامی بنیادوں پر مکمل کر کے پانی کی فراہمی یقینی بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں