لاڑکانہ، مقتول طالبِ علم کا خاندان انصاف کے لئے سراپا احتجاج

لاڑکانہ (نامہ نگار، نور احمد عباسی) طالبِ علم کے قتل کے خلاف لاڑکانہ کے نواحی گاؤں سوبھو خان نوہاڑی کے مکین مرد، خواتین اور بچوں نے قاتلوں کی گرفتاری کے لئے پریس کلب کے سامنے قرآن پاک اٹھاکر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین کی جانب سے قاتلوں کو دہائیاں اور سخت نعریبازی۔ اس موقع پر مقتول امجد عرف عامر نوہانی کی والدہ منڈم نوہانی کا کہنا تھا کہ میں نے اپنے بیٹے کا رشتہ اپنے ہی گاوں کے گل محمد نوہانی کے خاندان سے مانگا تھا۔ چونکہ ہم غریب تھے جو بات ان کو ناگوار گذری تھی، جس کے باعث میرے بیٹے کو پی ٹی ایس روڈ پر فائرنگ کرکے قتل کیا گیا جو انتہائی ظلم اور ذیادتی ہے۔

مقتول طالبِ علم کی والدہ کا کہنا تھا کہ میرا بیٹا بارہویں جماعت میں پڑھتا تھا جو پڑھائی کے وقفے کے بعد کراچی کمانے جاتا تھا اور مقتول گھر میں اکلوتا ہی کمانے والا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ سچل تھانے پر چار ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کروایا جن میں سے مختیار نوہانی کو گرفتار کیا گیا ہے باقی نامزد ملزمان جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہیں۔ انہوں نے ڈی آئی جی لاڑکانہ اور ایس ایس پی لاڑکانہ سے انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں