ملیر، پریس کلب میں خواجہ سراہوں کی امداد

ملیر (پریس رلیز) پریس کلب کی پرزور اپیل پر مخیر حضرات کی جانب سے 35سے زائد خواجہ سراہوں میں راشن تقسیم کیا گیا۔ چیئرمین پیپلز ہیومن رائٹس آرگنائزیشن احسان علی کھوسو اور چیئرمین جمیلہ بیگم فاؤنڈیشن ڈاکٹر محمد ادریس آرائیں نے ملیر پریس کلب پہنچ کر ملیر پریس کلب کے صدر میر ذوالفقار کی اپیل پر خواجہ سراہوں میں راشن تقسیم کیا۔ اس موقع پر ملیر پریس کلب کے صدر میر ذوالفقار نے کہاکہ خواجہ سراہ سماج میں ایک اہم حیثیت رکھتے ہیں جن کو موجودہ لاک ڈاؤن کی صورتحال میں حکومت اور اعلیٰ حکام نے مکمل طور پر نظرانداز کیا ہوا ہے۔ ایسی صورتحال کے بعد ملیر پریس کلب کی جانب سے مخیر حضرات کو انسانیت کے تحت اپیل کی گئی تھی کہ خواجہ سراہوں کی مدد کی جائے۔

اس موقع پر پیپلز ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کے چیئرمین احسان علی کھوسو اور جمیلہ بیگم فاؤنڈیشن کے چیئرمین ڈاکٹر محمد ادریس آرائیں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ ملک میں کرونا وائرس کے باعث جہاں ہر انسان متاثر ہوا ہے وہیں سب سے زیادہ خواجہ سراہ متاثر ہوئے ہیں جن کا اکثر گذر سفر امداد پر تھا جو لاک ڈاؤن کے باعث سخت اذیت کا شکار تھے اور کسی سے مانگنے سے لاچار تھے۔ ہمیں جب ملیر پریس کلب کے عہدیداران کی جانب سے خواجہ سراہوں کی امداد کے لئے اپیل کی گئی تو ہم تمام کاررواں چھوڑ کر راشن کی مدد کے لیے پہنچ گئے۔
انہوں نے مزید کہاکہ اس وقت تک سینکڑوں خادانوں میں راشن تقسیم کر چکے ہیں۔ ملیر پریس کلب موجودہ صورتحال میں بہترین کردار ادا کر رہا ہے۔ ہم سلام پیش کرتے ہیں ملیر پریس کلب کے تمام صحافیوں کو جو اپنی تمام مصروفیتوں کو چھوڑ کر غریب ، مسکین اور ضرورتمند افراد کی مدد کر رہے ہیں اور غریب و مستحق افراد کی نشاندہی کرنے میں ہماری مدد کر رہے ہیں جو کرونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن سے سخت متاثر ہیں۔ اس موقع پر ملیر پریس کلب کے جنرل سیکریٹری علی محمد گبول، نائب صدر سجاد چھجڑو، خزانچی آصف جتوئی، سینئر صحافی جمیل چانڈیو، راجا بلوچ، ثناءاللہ شیخ، آصف قریشی اور دیگر بھی موجود تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں