ملیر، کینسر میں مبتلا نوجوان مدد کا منتظر

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی) گگھر کے قریب ریلوے کالونی میں کرائے پر رہائش اختیار کرکے اپنے خاندان کی کفالت کرنے والا محنت کش امتیاز خاصخیلی گذشتہ سات ماہ سے کینسر میں مبتلا ہوکر بسترِ مرگ پر آگیا ہے۔ نوجوان کی والدہ دو سال سے پہلے ہی بیماری میں مبتلا ہیں۔ مذکورہ محنت کش نے اپنی ساری جمع پونجی اپنے علاج اور اپنی والدہ پر لٹا دی ہے اور اب پورا خاندان شدید غربت اور کسمپرسی میں مبتلا ہونے کے بعد فاقہ کشی کے دہانے پر پہنچ چکا ہے۔
اس سلسلے میں بیمار محنت کش امتیاز خاصخیلی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بد قسمتی سے وہ کینسر جیسے خطرناک مرض میں مبتلا ہو گیا ہے جبکہ اس سے قبل وہ محنت مزدوری کرکے اپنی والدہ کا علاج کروا رہا تھا لیکن اب وہ دونوں بسترِ مرگ پر ہیں اور بچے بھوک سے بلبلا رہے ہیں۔ اس کا مزید کہنا تھا کہ خدا کے علاوہ ہماری کوئی مدد کرنے والا نہیں ہے۔ انہوں نے حکومتِ سندھ اور مخیر حضرات سے اپیل کی ہے کہ ان کا علاج کروا کر ان کی اور ان کے بچوں کی زندگی بچائی جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں