ملیر، لاک ڈاؤن کے باوجود بھی جرائم پیشہ گروہ سرگرم

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی) دیہی علاقوں میں لاک ڈاوَن کے باوجود جرائم پیشہ افراد کا گروہ سرگرم ہوگیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق یونین کونسل درسنہ چھنہ کی گنجان آبادی حاجی شیدی گوٹھ لٹیروں کے لیے آسان حدف بن گیا ہے جہاں چوری اور لوٹ مار کی وارداتیں روز کا معمول بن گئی ہیں۔ علاقہ مکینوں حبیب اللہ، محمد حسین، محمد یعقوب و دیگر نے بتایا کہ دو موٹر سائیکلوں پر سوار آٹھ سے زائد جرائم پیشہ افراد کا گروہ گھروں اور راہگیروں سے ڈکیتیاں اور لوٹ مار کر رہا ہے۔
انہوں نے مزید بتایا کہ الطاف حسین خاصخیلی کی موٹر سائیکل، نورانی الیون گراؤنڈ سے بجلی موٹر اور کیبل وائر، شاہنواز کباڑی کے دکان سے سامان، عظیم دکاندار کے دکان سے سولر سسٹم، مشکی عارفانی سے موبائل فون سمیت متعدد مکین ان کا نشانہ بن چکے ہیں جس کے باعث علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے۔ اس حوالے سے علاقہ مکینوں نے احتجاج کر تے ہوئے صحافیوں کو بتایا کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے لیے لگائے گئے لاک ڈاؤن کے دوران بازار اور مارکیٹ بند ہونے کے باعث لٹیرے رات کی تاریکی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے راہ گیروں، چھوٹی بڑی گاڑیوں کو باآسانی لوٹ کر فرار ہو جاتے ہیں۔ گھر کے مکین بھی محفوظ نہیں ہیں۔ تمام واقعات کی این سی شاہ لطیف تھانے پر درج کر وائی گئی ہے۔ اہلیانِ حاجی شیدی گوٹھ نے ڈی ایس پی فیصل خان اور تھانہ شاہ لطیف کے ایس ایچ سے بڑھتی ہوئی چوری اور لوٹ مار کی وارداتوں کے خلاف مدد کی اپیل کی ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں