ملیر، جرائم پیشہ گروہ کے باعث شہری عدم تحفظ کا شکار

ملیر (نامہ نگار، منظورسولنگی) مختلف علاقوں میں رواں ہفتے میں مسلسل چوری، ڈکیتی اور لوٹ مار کے جاری واقعات میں تھمنے کے بجائے مزید اضافہ ہورہا ہے۔ گذشتہ24گھنٹوں میں مزید تین واقعات کی اطلاعات ملی ہیں۔ ابراہیم حیدری کی مین مارکیٹ میں سترام کی موبائل کمیونیکیشن کی دوکان کی چھت اور شٹر توڑ کر لاکھوں روپے کے موبائل فونز چوری کرلیے گئے ہیں۔
میگھا رام کی فش فیکٹری میں ڈاکا ڈال کر 35سے زائد فش پاؤڈر کی بوریاں چوری کرلی گئی ہیں۔ دوسری جانب میمن گوٹھ تھانے کی حدود سولنگی اسٹاپ پر مسلح افراد کی جانب سے لوٹ مار کے خلاف مزاحمت کرنے پر مسلح افراد نے 20 سالہ سیکیورٹی گارڈ ریحان کو شدید زخمی کردیا۔ زخمی کو فوری طور پر جناح ہسپتال منتقل کردیا گیا۔
ضلع بھر میں جاری جرائم پیشہ افراد کی مسلسل وارداتوں کے باعث عوام میں شدید عدم تحفظ کا احساس پایا جاتا ہے۔ اس سلسلے میں پولیس کی مسلسل بے حسی سے مایو س ہوکر مختلف علاقوں میں تاجروں اور شہریوں نے اپنی جان و مال کی حفاظت کیلئے خود ساختہ چوکیداری نظام متعارف کروایا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں