ملیر، کرونا ہسپتال سے وبا پھیلنے کا خدشہ، علاکہ مکین پریشان

ملير (نامہ نگار، منظورسولنگی) گڈاپ سٹی میں 50 بستروں پر مشتمل کرونا وائرس میں مبتلہ مریضوں کے علاج کےلیے قائم کئے گئے ہسپتال کے بعد گذشتہ روز گڈاپ کے مضافاتی علاقوں میں بڑے پیمانے پر کرونا وائرس کے مریضوں کی کٹس، دستانے و دیگر آلودہ اشیاء پھینکی گئی ہیں جس کے باعث علاقہ میں مقیم لوگ اور معصوم بچوں میں اس میلک بیماری پھیلنے کے خطرات لاحق ہیں۔ اس سلسلے میں یوسی گڈاپ کے چیئرمین فرید جوکھیو اور تحریکِ انصاف ملیر کے رہنما قادر بخش کلمتی و دیگر نے رابطہ کرنے پر بتایا کہ خطرناک وائرس کی کٹس مضافاتی علاقوں میں پھینکنا انسانی زندگیوں سے کھیلنے کے برابر ہے۔ جب سے گڈاپ سٹی میں کرونا کے مریضوں کا ہسپتال قائم کیا گیا ہے اکثر کٹس اور دستانے پھینکنا روز کا معمول بن گیا ہے۔ اس سے قبل شہر سے مرے ہوئے کتے و دیگر گند کچرہ گڈاپ کے مختلف علاقوں میں پھینکا جارہا تھا ۔ انہوں نے احتجاج کرتے ہوئے حکومتِ سندھ سے مطالبہ کیا کہ گڈاپ کے علاقوں میں کرونا کٹس اور گندگی پھیلانے کے خلاف مؤثر کارروائی کرکے انسانی زندگیاں بچائی جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں