دادو، لاک ڈاؤن کے خلاف شہریوں کا احتجاج

دادو (نامہ نگار، فیاض جعفری) کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے حکومتِ سندھ کی جانب سے نافذ کردہ لاک ڈاؤن ایک مرتبہ پھر مذاق بن کر رہ گیا۔ شہریوں کی بڑی تعداد لاک ڈاؤن کے خلاف سڑکوں پر نکل آئی۔ پولیس کے پہنچنے پر شہریوں نے پولیس کی گاڑی کو گھیر لیا اور پولیس موبائل کے آگے دھرنا دے کر بیٹھ گئے۔ اس موقع پر شہریوں نے “لاک ڈاؤن ختم کرو بھوک مٹاؤ” کے نعرے لگاتے ہوئے حکومتی لاک ڈاؤن خلاف انوکھا احتجاج کیا۔
مظاہرین کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کے باعث کاروبار شدید متاثر ہوا ہے۔ لاک ڈاؤن کو برداش کرنے کی اب اور سکت نہیں ہے۔ ڈیڑھ ماہ سے مسلسل لاک ڈاؤن کا سامنہ ہے تاہم لاک ڈاؤن کے باعث گھروں می فاکا کشی ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کی جائے تاکہ بچوں کے لیے روزی روٹی کما سکیں۔ شہریوں نے حکومت سے لاک ڈاؤن میں نرمی کرنے کا مطالبہ کیا۔ دوسری جانب نیشنل بینک کے باہر تنخواہیں لینے والے سرکاری ملازمین کا رش لگ گیا۔ پولیس لاک ڈاؤن کرانے میں مکمل طور ناکام ہوتے دکھائی دے رہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں