جانئے، امیتابھ بچن اور عمران خان کی ایک یادگار ملاقات کے بارے میں۔

بھارتی اداکار امیتابھ بچن نے 27 برس پہلے وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی دعوت پر لندن میں ایک تقریب میں شرکت کی تھی۔
3 دسمبر 1992 کو انٹر کانٹیننٹل ہوٹل لندن میں شوکت خانم ہسپتال کی چندہ مہم کے ایک پروگرام میں امیتابھ بچن ، نصرت فتح علی خان، مِک جیگر، جیری ہال، خالد شفیع سمیت دیگر معروف شخصیات نےعمران خان کی دعوت پر تقریب میں شرکت کی تھی۔

تقریب میں پہلے عمران خان نے شوکت خانم ہسپتال بنانےکا خواب اور اس کی تعمیل تفصیل سے بتائی جس کے بعد امیتابھ بچن کو اسٹیج پر آنے کی دعوت دی گئی ۔ شرکاء نے لیجنڈ اداکار کا تالیاں بجا کر بھرپور استقبال کیا۔
انہوں اپنی تقریر کا آغاز انگریز شرکاء کے لیے ہیلو ، مسلمانوں کو السلام علیکم اور ہندو حاضرین کو نمشکار کہہ کر کیا۔ امیتابھ بچن نے عمران خان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اس تقریب میں شرکت کرنا میرے لیے اعزاز کی بات ہے ۔ انہوں نے ہسپتالوں کی اہمیت اور اُن میں موجود جدید ٹیکنالوجی کو وقت کی ضرورت قرار دیتے ہوئے اپنے حالیہ حادثے کا تذکرہ کیا اور بتایا کہ دعاؤں کے ساتھ ساتھ لندن میں ڈاکٹرز نے کس طرح ان کی جان بچانے میں اہم کردار ادا کیا۔
انہوں نے عمران خان سے کہا کہ اس ہسپتال کی بنیاد رکھنے میں اور مستقبل میں اگر انہیں امیتابھ بچن کی کبھی بھی ضرورت پڑے تو وہ حاضر ہوں گے ۔ انہوں نے شوکت خانم کے لیے عمران خان کی کاوشوں کو بھی سراہا اور تقریب کے تمام شرکاء کی بھی اس نیک عمل میں شرکت کرنے پر تعریف کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں